Social

گدھے کے ساتھ باندھ کر گھیسٹنے سے بچہ ہلاک

انسانیت کو شرمادیا

یہ آٹھ سالہ مدثر ولد شیر افضل ہے، یہ ایبٹ آباد تھانہ لورہ کی حدود “کنگڑ میرا” کا رہائشی ہے. مدثر کا گدھا اس کے پڑوسی محمد مسکین کے کھیتوں میں چلا گیا جسے واپس لانے کے لیے مدثر کو جانا پڑا..

گدھے کے کھیت میں آنے اور کھیت خراب کرنے پر مسکین شدید غصے میں تھا، وہ گھات لگا کر بیٹھ گیا اور جیسے ہی مدثر گدھے کے قریب پہنچا مسکین نے مدثر کو مارنا شروع کر دیا، اس نے مدثر کو گدھے کے پیچھے باندھا اور گدھے پر لاٹھیاں برسانی شروع کر دیں. مدثر کی چیخ و پکار اور ڈنڈے کھا کر گدھا بِدک کر بھاگا اور مدثر کو پیچھے پیچھے گھسیٹتا رہا..

کئی کلومیٹر سڑک پر گھسٹنے سے مدثر کی کھال ادھڑ گئی، اس کا سر اور جسم پتھروں سے ٹکراتا رہا اور آٹھ سالہ مدثر جان سے ہاتھ دھو بیٹھا..

پولیس نے محمد مسکین کو گرفتار تو کر لیا ہے لیکن ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ مسکین کو بھی کسی گھوڑے کے پیچھے باندھ کر اسی طرح اذیت ناک موت دی جائے جس کا وہ حقدار ہے..

Comments

comments

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Close